پی ایس ایل نے زندگی بدل دی، شاداب خان

کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ ایمرجنگ پلیئر منتخب ہونے کے بعد 3 سال میں ٹیم کا کپتان بن جائوں گا،کپتان اسلام آباد یونائٹیڈ
کراچی: اسلام آباد یونائٹیڈ کے کپتان شاداب خان نے کہا ہے کہ کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ ایمرجنگ پلیئر کی حیثیت سے شروع کرنے کے بعد وہ تین سال میں ٹیم کے کپتان بن جائوں گا، دو مرتبہ کی چیمپئن اسلام آباد یونائٹیڈ کی کپتانی کرنا اعزاز کی بات ہے، ان پر کپتانی کا کوئی پریشر نہیں ہوگا کیوں کہ ٹیم میں سب پروفیشنل پلیئرز ہیں اور سب کو اپنا رول معلوم ہے، ساتھ ساتھ مصباح الحق کی رہنمائی بھی موجود ہوگی۔اپنے سفر کو یاد کرتے ہوئے شاداب نے کہا کہ وہ ٹور کرکے زمبابوے سے واپسی کی پرواز پر تھے جب پی ایس ایل ڈرافٹ ہوا، جب وہ دبئی میں ٹرانسٹ کے لیے تھے تو انہیں میسج ملا کہ ان کو اسلام آباد یونائٹیڈ نے پک کرلیا ہے۔انہیں اندازہ تھا کہ پی ایس ایل ایک بڑا موقع ہے اور یہاں کی کارکردگی انہیں پاکستان ٹیم میں منتخب کرواسکتی ہے۔شاداب خان جو بطور آل رانڈر خود کو منوانے کے خواہشمند ہیں، کہتے ہیں کہ اگر پی ایس ایل نہیں ہوتا تو شائد اتنی جلدی ٹیم میں نہیں آتے، ان کی طرح شاہین آفریدی، موسی خان اور دیگر نوجوان بھی پی ایس ایل کی وجہ سے ہی منظر عام پر آئے ہیں۔پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن پر بات کرتے ہوئے شاداب خان نے کہا کہ ہر ٹیم کی طرح ان کی بھی یہی کوشش ہوگی کہ گرا نڈ میں سو فیصد دیں۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں