گورنر پنجاب سے نیلسن منڈیلا کے داماد کی ملاقات

لاہور:گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے جنوبی افریقہ سے سابق صدر و فریڈم فائٹر نیلسن منڈیلا کے داماد پرنس موضی ڈلامینی اور سینیٹر پرنس مگو ڈیولاک نے ملاقات کی جس میں اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔عظیم سیاستدان نیلسن منڈیلاکےداماد نے گورنر پنجاب چوہدری سرور سے ملاقات کرتے ہوئے کہا دہشت گردی کے خلاف پاکستانی افواج اور عوام کی قربانیاں قابل تعریف ہیں، آزادی کشمیریوں کاحق ہے بھارت فوری کشمیریوں پر ظلم بند کرے۔

تفصیلات کے مطابق گورنرپنجاب چوہدری سرور سے نیلسن منڈیلا کے داماد موضی ڈلامینی کی ملاقات ہوئی ، گور نرہاؤس میں ملاقات کےدوران جنوبی افریقا کےسینیٹرماگودولیلی بھی موجودتھے۔

ملاقات میں گورنرپنجاب نے کہا عمران خان دنیامیں لیڈرآف دی پیس کےطورپرسامنےآرہےہیں، یورپی یونین میں کشمیر کے حق میں قراردادآسکتی ہے۔

چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ اوآئی سی اورعرب لیگ میں کشمیرکےحق میں قراردادکیوں نہیں؟ آرایس ایس اورمودی میں صرف نام کافرق ہے،دونوں انسانیت دشمن ہیں،31 سال میں95ہزارکشمیری شہید اور 22 ہزار خواتین بیوہ ہوچکی ہیں، خدا کے لیے مسئلہ کشمیروفلسطین کے حل کے لیے امت متحد ہوجائے۔

انھوں نے کہا کہ بھارت نےثابت کیاوہ سیکولرنہیں انتہاپسندریاست بن چکاہے، بھارت میں قانون شہر یت کےذریعے انسانیت کی تذلیل ہو رہی ہے اور مقبوضہ کشمیرکودنیا کی بڑی چھاؤنی میں بدل دیاہے۔

موضی ڈلامینی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے پاکستان کے دورے پر ہیں۔رواں ہفتے انہوں نے پارلمینٹ ہاس کا دورہ کیا ، جہاں ان کی فیصل جاوید سے ملاقات ہوئی ، ملاقات میں اہل کشمیرپرجاری بھارتی مظالم پر بات چیت ہوئی، فیصل جاوید نے نیلسن منڈیلاکے داماد موزی ڈلامنی کا پارلیمان آمد پر خیر مقدم کیا، جنوبی افریقا کے سینیٹرماگو دو لیلی بھی نیلسن منڈیلا کے داماد کے ہمراہ تھے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں