کورونا وائرس: خیبرپختونخوا حکومت کا اہم اقدام

پشاو :خیبرپختونخوا میں کورونا وباء کے ممکنہ پھیلاؤ کو روکنے اور اس سے نمٹنے کے لیے تمام لائن ڈیپارٹمنٹس نے مشترکہ حکمت عملی کے تحت اقدامات اٹھانے کا اعادہ کیا ہے۔ صوبے میں صحت ایمرجنسی کے نفاذ کے بعد خیبر پختونخوا پبلک ہیلتھ کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا جو کہ مجموعی طور پر کمیٹی کا چوتھا اجلاس تھا۔ صوبائی سیکریٹری صحت محمد یحیٰی اخوانزہ کی زیر صدارت منعقد ہونے والے اجلاس میں محکمہ ماحولیات، فنانس، لائیو سٹاک، پبلک ہیلتھ انجینئرنگ، پی ڈی ایم اے، زراعت، ہیلتھ کیئر کمیشن، فوڈ سیفٹی اتھارٹی سمیت دیگر محکموں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ کورونا وائرس سے متعلق اجلاس میں پاک فوج، سول ایوی ایشن اور ڈبلیو ایچ او کے نمائندے بھی شریک ہوئے۔ اسپیشل سیکرٹری صحت ڈاکٹر فاروق جمیل اور ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹر طاہر ندیم سمیت ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر شاہین آفریدی بھی اجلاس میں شریک تھیں۔ محکمہ صحت کی جانب سے اجلاس کو کورونا وائرس کے عالمی سطح پر پھیلاؤ، تدارک، حفاظتی تدابیر اور دیگر اعداد و شمار سے آگاہ کیا گیا۔ صوبے میں صحت ایمرجنسی کے نفاذ کے بعد پبلک ہیلتھ کمیٹی کے ممبران نے محکموں پر عائد ہونے والی ذمہ داریوں پر انہیں بریفنگ دی گئی اور ملک خصوصاً صوبے کے بہتر مفاد میں بھرپور تعاون کی استدعا کی گئی۔ کورونا وباء سے نمٹنے کے لیے محکمہ صحت کی جانب سے اٹھائے جانے والے اب تک کے اقدامات سے بھی آگاہ کیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ تمام لائن ڈیپارٹمنٹس کے نامزد فوکل پرسنز اجلاس منعقد کر کے کسی بھی ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کے لیے پلان ترتیب دیں گے۔ اسی طرح بارڈرز اور ائیرپورٹ پر مسافروں کی اسکریننگ کو مزید موثر بنایا جائے گا۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ محکمہ صحت پرسنل پروٹیکٹو ایکوپمنٹ (PPEs) اضلاع کے ہسپتالوں میں اور دیگر مراکز صحت کو مہیا کر رہا ہے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں