پولینڈ میں کووڈ19-کے پہلے کیس کی تصدیق

مغربی قصبے زیلونا گورا میں ایک شخص کا ٹیسٹ مثبت پایاگیا، مریض سے تعلق رکھنے والے تمام افراد کو قرنطینے میں رکھا گیا ہے،وزیر صحت
وارسا:پولینڈ کے وزیر صحت لکاز زوموسکی نے ملک میں کووڈ19-کے پہلے مصدقہ کیس کا اعلان کیا ہے۔بدھ کو زوموسکی نے کہا کہ مغربی قصبے زیلونا گورا میں ایک شخص کا ٹیسٹ مثبت پایاگیاہے اور یہ کہ مریض کو ہسپتال میں داخل کیاگیا ہے جہاں اس کی حالت بہتر ہے۔وزیر نے مزید تفصیل بتائے بغیر کہا کہ اس مریض سے تعلق رکھنے والے تمام افراد کو قرنطینے میں رکھا گیا ہے۔اٹلی میں موسم سرما کی تعطیلات گزارنے والی دو لڑکیوں میں کورونا وبا کی ممکنہ علامات پائے جانے کے بعد شمال مغربی پولینڈ کے قصبہ پولیس کے ایک اسکول کے200سے زائد طالب علموں اور اساتذہ کو منگل کو قرنطینہ کیاگیا تھا۔پولینڈ نے ملک میں کووڈ19-کے پھیلنے کے ممکنہ خطرے کے باعث اقدامات میں اضافہ کردیا ہے جن میں 24 گھنٹوں کے لئے ہاٹ لائن کو کھلارکھنے ،داخلی مقامات پرصحت چیک کرنے کے اضافی اقدامات اور ہنگامی صحت بل کی منظوری شامل ہے۔
دوسری جانب عراق کے شمال مشرقی صوبہ سلیمانیہ میں کووڈ19-سے متاثرہ 70 سالہ شخص بدھ کو انتقال کر گیا،یہ بات مقامی صحت ذرائع نے بتائی۔نیم خودمختار خطے کردستان کے علاقے سلیمانیہ کے محکمہ صحت سے تعلق رکھنے والی صباح حورمی نے ایک بیان میں کہا کہ یہ عراق میں وبائی کرونا وائرس کی وجہ سے ہونے والی پہلی موت ہے۔عراق میں اب تک کووڈ19-کے 32واقعات رپورٹ ہوئے ہیں جن میں سے 14 کا تعلق دارالحکومت بغداد ، صوبہ کرکوک 5 ، سلیمانیہ 5 ، بابل 1 ، میسان 1، نجف 3 ، واسط 2 اور 1مریض کا تعلق کربلا سے ہے۔ملک میں کیسز کی تصدیق کے بعد سے عراقی حکام کرونا وائرس کے انسداد کیلئے سلسلہ وار احتیاطی تدابیر اختیار کر رہے ہیں۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں