چین میں27 غیر ملکیوں میں نوول کرونا وائرس کی تشخیص

تین علاج کے بعد اسپتال سے ڈسچارج ،2 کا انتقال ، 22دیگر اسپتالوں میں الگ تھلگ رکھے گئے ہیں،مرنے والوں میں ایک چینی نژاد امریکی اوردوسرا جاپانی شہری ہے، غمزدہ خاندانوں سے رابطے میں ہیں، چین ووہان میں تمام غیر ملکی باشندوں کی صحت وسلامتی کو انتہائی اہمیت دیتا ہے،ترجمان وزارت خارجہ گینگ شوانگ
بیجنگ:چینی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ چین میں 27غیر ملکیوں میں نوول کرونا وائرس کی نشخیص ہوئی جن میں سے تین علاج کے بعد اسپتال سے ڈسچارج ہوئے،2 کا انتقال جبکہ 22دیگر اسپتالوں میں الگ تھلگ رکھے گئے ہیں۔ترجمان گینگ شوانگ کے مطابق یہ اعدادوشمارپیرکی صبح 8بجے تک کے ہیں انتقال کرنے والوں میں ایک چینی نژاد امریکی اوردوسرا جاپانی شہری ہے۔ترجمان نے بتایا کہ چینی نژاد امریکی اور جاپانی شہری کا بالترتیب 6فروری کی شام سات بجے اور8فروری کو علی الصبح انتقال ہوا۔گوانگ نے بتایا کہ طبی عملے نے ان دونوں افراد کے علاج معالجے کی اپنی بہترین کوشش کی اور چین ان افراد کے غمزدہ خاندانوں سے رابطے میں ہے۔گینگ نے کہا کہ چین ان دونوں افراد کے انتقال پر اپنی گہری تعزیت کااظہار کرتا ہے جبکہ سفارتی ذرائع سے امریکہ اور جاپان کو اس حوالے سے مطلع بھی کردیا گیا ہے۔گینگ نے کہا کہ چین امریکہ اور جاپان کے ساتھ غمزدہ خاندانوں کو ضروری امداد کی پیش کش کرے گا۔ترجان نے کہا کہ چین ووہان میں تمام غیر ملکی باشندوں کی صحت وسلامتی کو انتہائی اہمیت دیتا ہے اور ان کے خدشات اور درخواستوں پربروقت عمل کرتے ہوئے موثراقدامات اٹھائے جاتے ہیں۔گینگ نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس ادھانوم گبریسیئس بھی کئی بار کہ چکے ہیں کہ چین سے جلدی میں انخلا کی سفارش نہیں کی جاسکتی بلکہ بہترین طرز عمل یہ ہے کہ وہاں رہتے ہوئے اپنی حفاظت کو بہتر بنایاجائے ترجمان نے زوردیا کہ ڈبلیو ایچ او کی پیشہ ورانہ سفارشات کا احترام کیا جانا چاہئے۔اپنے شہریوں کو چین سے نکالنے کے خواہشمند ممالک کے حوالے سے گینگ نے کہا کہ چین متعلقہ انتظامات کرے گا اوربین الاقوامی طریقوں اور وبا کے تدارک اور کنٹرول کے لئے ملکی سطح کے اقدامات کے ساتھ ضروری امداد فراہم کرے گا۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں