چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام کا ایئر یونیورسٹی میں خصوصی خطاب

ہر پاکستانی مظلوم کشمیریوں کے ساتھ ہے، چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام کا ایئر یونیورسٹی میں خصوصی خطاب

پہلا یوم یکجہتی کشمیر 14 اگست 1931 کو علامہ اقبال کی اپیل پر منایا گیا، سینئر صحافی حامد میر کا انکشاف
اسلام آباد:چیئرمین پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر سید فخر امام نے کہا ہے کہ پاکستان اور کشمیر لازم و ملزوم ہیں،پاکستان میں بسنے والا ہر پاکستانی مظلوم کشمیریوں کی جدو جہد کی حمایت کرتا ہے۔ ایئر یونیورسٹی کے زیر اہتمام یوم یکجہتی کشمیر کی مناسبت سے آگاہی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس کے مہمان خصوصی چیئرمین پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر سید فخر امام تھے، نئی نسل کو جدو جہد کشمیر کی تاریخ سے آگاہی فراہم کرنے کیلئے سینئر صحافی حامد میر کو بھی خصوصی طور پر مدعو کیا گیا، رجسٹرار ایئریونیورسٹی ایئرکموڈور(ر) محمد سلیم بھی اس موقع پر موجود تھے۔ تقریب سے اپنے خطاب میں سید فخر امام نے کہا کہ پاکستان اور کشمیر لازم و ملزوم ہیں،ہم مظلوم کشمیریوں کے ساتھ ہیں، بھارت کشمیر ایشو کو اقوام متحدہ میں لیکر گیا۔سید فخر امام نے کہا کہ کشمیری عوام کو ریاستی دہشت گردی کا سامنا ہے، بھارت نے مقبوضہ وادی کو دنیا کی سب سے بڑی جیل بنا دیا ہے، نئی نسل کو کشمیری عوام کی لازوال قربانیوں سے آگاہی ہونی چاہیے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سینئر صحافی حامد میر نے تاریخی حوالے دیتے ہوئے انکشاف کیا کہ پہلا یوم یکجہتی کشمیر 14 اگست 1931 کو علامہ اقبال کی اپیل پر منایا گیا،شیخ عبداللہ کو قائد اعظم نے پاکستان میں شمولیت کیلئے قائل کرنے کی کوشش کی لیکن اس نے ہندوستان کو ترجیح دی، آج اسکے بیٹے اور پوتے ہندوستان نے قید کردیے ہیں، قائد اعظم اور علامہ اقبال کا کشمیر سے گہرا تعلق تھا۔ سوال و جواب سیشن میں تبادلہ خیال کرتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ جب تک کشمیر پاکستان کا حصہ نہیں بنتا، پاکستان کا وجود نامکمل ہے۔ اس موقع پر ائر یونیورسٹی طلباء و طالبات کا جوش و خروش دیدنی تھا۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں