وزیر خارجہ سے قطری سفیر کی ملاقات

اسلام آباد: قطری سفیر نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو 29 فروری کو دوحہ میں امریکہ طالبان امن معاہدے پر دستخط کی تقریب میں شرکت کی خصوصی دعوت دی ہے۔ وزارت خارجہ کی طرف سے منگل کو جاری بیان کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے قطری سفیر صقر بن مبارک نے دفترخارجہ میں ملاقات کی جس میں انہوں نے وزیر خارجہ کو دوحہ میں امریکا طالبان امن معاہدے پر دستخط کی تقریب میں قطری ڈپٹی وزیراعظم اور وزیر خارجہ جناب شیخ محمد بن عبد الرحمن الثانی کی جانب سے شرکت کی دعوت دی ۔ قطری سفیر نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو خصوصی دعوت نامہ پیش کیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان، امریکہ طالبان معاہدے سے متعلق اعلان کا خیر مقدم کرتا ہے۔ پاکستان کا ہمیشہ سے مو¿قف رہا ہے کہ افغان تنازع کا کوئی فوجی حل نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغان مفاہمتی عمل کو آگے بڑھانے میں پاکستان اور قطر کا کلیدی کردار ہے۔ آ ج دنیا پاکستان کا مو¿قف تسلیم کر رہی ہے۔ پاکستان پرامید ہے کہ امن معاہدے پر دستخط انٹرا افغان مذاکرات کی طرف لے جائیں گے۔
بعد ازاں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سے اقوام متحدہ میں تعینات پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے ملاقات کی جس میں خطے کے معاملات، کشمیر کی صوتحال اور افغان مفاہمتی عمل پر بات چیت کی گئی۔ وزارت خارجہ کی طرف سے جاری بیان کے مطابق منیر اکرم نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے حالیہ دورہ پاکستان کی کامیابی پر وزیرخارجہ شاہ محموقریشی کو مبارکباد دی۔ ملاقات میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 7 سال کے بعد سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کا دورہ پاکستان، اقوام عالم کے پاکستان پرتیزی سے بڑھتے ہوئے اعتماد کا مظہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کی جانب سے مصالحت کی پیشکش خوش آئند ہے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں