پاکستان میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں،وزیراعظم

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان سے ملٹی نیشنل ٹیلی کمیونیکیشن سروسز کمپنی وی آن) کے چیف آپریشنز آفیسر سرگی ہیریرو نے بدھ کو یہاں ملاقات کی۔ جاز پاکستان وی آن کی زیلی کمپنی ہے۔ جاز پاکستان کے چیف ایگزیکٹو آفیسر عامر ابراہیم، چیف کارپوریٹ اینڈ ریگولیٹری افیئرز سیّد فخر احمد اور ڈیجیٹل فنانشل سروسز کے سربراہ الیاس یزبیک بھی ان کے ہمراہ تھے۔ چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ کے چیئرمین سیّد زبیر حیدر گیلانی، پی ٹی اے کے چیئرمین میجر جنرل (ر) عامر عظیم باجوہ اور وزیراعظم کی ڈیجیٹل پاکستان کیلئے فوکل پرسن تانیہ ادروس بھی اس موقع پر موجود تھیں۔ وزیراعظم عمران خان نے وی آن کی پاکستان کے ساتھ طویل وابستگی کو سراہا، کمپنی نے پاکستان میں 9 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے اور 6 کروڑ صارفین کو خدمات فراہم کر رہی ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں مواصلات اور توانائی کے شعبوں میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں، حکومت کاروبار کو آسان بنانے پر اپنی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے اور اس نے آزاد سرمایہ کاری پالیسی اختیار کی ہے جس کو بین الاقوامی مالیاتی اداروں کی طرف سے سراہا جا رہا ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ”ڈیجیٹل پاکستان“ کا منصوبہ شروع کیا جس کا مقصد نوجوانوں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے تاکہ وہ آزادانہ طور پر کام کرکے ملک کی اقتصادی ترقی میں اپنا کردار بھرپور طریقہ ادا کر سکیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت ڈیجیٹل پالیسی کے تحت پاکستان کی آئی سی ٹی انڈسٹری کا حجم آئندہ چند سالوں کے دوران 20 ارب ڈالر تک بڑھانا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس پالیسی کے تحت آئی ٹی کے شعبہ میں نوجوانوں کو ڈیجیٹل خدمات میں جدت لانے اور اس شعبہ میں اپنا کردار ادا کرنے کیلئے انفراسٹرکچر اور ادارہ جاتی فریم ورک کے ساتھ ڈیجیٹل ایکو سسٹم فراہم کیا جا رہا ہے۔ کمپنی کے چیف آپریشنز آفیسر سرگی ہیریرو نے وزیراعظم اور ان کی حکومت کی طرف سے ٹیلی کام کمپنیوں کو کام کرنے کا مسابقتی اور شفاف ماحول فراہم کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے بتایا کہ جاز پاکستان نے ”انٹرنیٹ سب کیلئے“ کی مہم شروع کی ہے جس کے تحت سوشل میڈیا، جاز کیش اور وزیراعظم سٹیزن پورٹل کیلئے قابل استطاعت موبائل فون اور انٹرنیٹ کی رسائی فراہم کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سروس کی فراہمی کے ذریعے شہریوں کو چھوٹی اور درمیانی درجے کی اقتصادی سرگرمیاں کو انجام دینے کے قابل بنانے اور گورننس کو بہتر بنانے میں بھی مدد ملے گی۔ سرگی ہیریرو نے حکومت کی طرف سے جعلی خبروں کی روک تھام کیلئے کئے جانے والے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ جعلی خبروں کے ذریعے غیر یقینی صورتحال اور خوف و ہراس پیدا کرنا سرمایہ کاری کیلئے تباہ کن ہے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں