بلوچستان میں یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے مختلف تقاریب

کوئٹہ/اندرون بلوچستان: ملک بھر کی طرح بلو چستان میں بھی یو م یکجہتی کشمیر کے موقع پر صو با ئی دارلحکومت کو ئٹہ سمیت ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز میںکشمیری مسلما نوںسے اظہا ر یکجہتی کے لئے ریلیوں ،مظا ہروں اور مختلف تقاریب کا انعقاد کیا گیاجس میں بھا رتی وزیر اعظم نریندر مو دی کے پتلے بھی جلا ئے گئے ، ریلیوں اور مظا ہروں میں سیاسی ،مذہبی جماعتوں کے رہنما ئوں و کارکنوں ،طلبا ء تنظیموں ،چیمبر آ ف کا مرس ،تا جر تنظیموں کے عہدیداران و ممبرا ن ،مزدوروں اور زندگی کے مختلف شعبوں سے وابستہ افراد کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ریلیوں ، مظا ہروں اور تقاریب کے شرکا ء نے بینرز،پلے کا رڈز، قومی اور کشمیر کے پرچم ہا تھوں میں اٹھا رکھے تھے بلکہ وہ کشمیری مسلما نوں کو استصواب را ئے دینے اور مسئلہ کشمیر کے کشمیری عوام کی امنگوں کے مطا بق اقوام متحدہ کی قرارداوں کی روشنی میں حل سے متعلق نعرے با زی کر رہے تھے ۔تفصیلا ت کے مطا بق بدھ کے روز یو م یکجہتی کشمیرکی منا سبت سے صو با ئی دارالحکومت کو ئٹہ میں پا کستان تحریک انصاف بلوچستان،آل بلوچستان کلرک اینڈ ٹیکنیکل ایمپلائز ایسوسی ایشن ،جما عت اسلامی خواتین ونگ،عوامی خد متگا ر فا ئونڈیشن،جما عت اسلامی کو ئٹہ یو تھ ونگ ،اہلیان ہزارہ ٹائون ،شیعہ کا نفرنس و دیگر کی جا نب سے ریلیاں نکا لی گئیں پا کستان تحریک انصاف ضلع کو ئٹہ کی جا نب سے منعقدہ مظا ہرے کی قیادت ڈاکٹر منیر بلو چ،با ری بڑیچ و دیگر نے کیاس موقع پرخطا ب کر تے ہو ئے مقررین کا کہنا تھا کہ وہ دن دور نہیں جب کشمیرکی آ زادی کا سورج طلوع ہو گا ،آج ہمیں خوشی ہے کہ ملک بھر کی طرح بلو چستان کی عوام ،تا جر ،سیاسی کا رکن و دیگر سب کشمیری مسلما نوں سے اظہا ر یکجہتی کے لئے نکل آ ئے ہیں بلکہ مو جو دہ وزیر اعظم عمرا ن خان اوران کی ٹیم نے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ سے لیکر دنیا کے ہر فورم پر اجا گر کیا ہے اس سے نا صرف کشمیری مسلما نوں پر ہو نے والے ظلم اور بر بریت اقوام عالم پر عیاں ہو چکے ہیں بلکہ بھا رت کی جا نب سے کشمیر میں کی جا نے والی انسا نی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے بھی دنیا بھر میں لوگ آ شنا ہو ئے ہیں انہوں نے کہا کہ مو جو دہ دور حکومت میں پا کستان نے کشمیر کے مسئلے پر جو سفارتی کا میا بیاں حاصل کر رکھی ہیں و ہ سب کے سا منے ہیںہما ری کا میا ب سفارتی کا وشوں سے بھا رت دنیا بھر میں رسوا ہوا ہے ،انہوں نے کہا کہ ملک بھر کی عوام کی طرح بلو چستانی عوام کے دل بھی کشمیریوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں ہم سے کشمیر کو پا کستان کی شہ رگ سمجھتے ہیں بلکہ اس سلسلے میں کسی قر با نی سے دریغ بھی نہیں کیا جا ئے گا ، انہوں نے کہا کہ بھا رت کی مو جو دہ سر کا ر اس خیا م خیا لی میں مبتلا ہے کہ وہ بھا رت کے حوالے سے قانون سازی و دیگر کر کیاس پر اپنے قبضے کو مستحک کرے گا تو یہ اس کی بھو ل ہے کیو نکہ پا کستان کا بچہ بچہ کشمیر کے لئے کٹ مر نے کو تیا ر ہیاس موقع پر مظا ہرے کے شرکا ء نے بھا رت کے خلا ف نعرے با زی بھی کی اور مطا لبہ کیا کہ مسئلہ کشمیر کشمیری عوام کی امنگوں اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل کیا جا ئے ۔جماعت اسلا می خواتین ونگ کی جا نب سے بھی یو م یکجہتی کشمیر کی منا سبت سے کو ئٹہ پریس کلب کے سا منے مظا ہرہ کیا گیا جس کی قیا دت ضلعی ناظمہ فرزانہ اعجا ز نے کی جبکہ شرکا ء سے ضلعی ناظمہ اور حافظ نو ر علی نے خطا ب کر تے ہو ئے کہا کہ کشمیر پا کستان کی شہ رگ اور اٹوٹ انگ ہے جسے کسی صورت دستبردار نہیں کیا جا سکتا ،کشمیر میں نہتے لو گوں ،خواتین اور بچوں پر انسا نیت سوز مظالم کا سلسلہ آ ج سے نہیں 70سالوں سے جا ری و ساری ہے مو جو دہ بھا رتی حکومت میںان مظا لم میںمزید تیزی آ ئی ہے جس کا واضح ثبو ت مہینوں سے جا ری کر فیو ہے جس کی وجہ سے و ادی کشمیر عملاجیل اور عقوبے خا نے میں تبدیل ہو چکی ہے انہوں نے کہا کہ روز اول سے ہی کشمیریوں کی پا کستان سے محبت اور حق خود ارادیت و استصواب را ئے کے مطا لبہ پر کشمیری مسلما نوں کی خو ن کی ہو لی کا سلسلہ جا ری ہے جس کے ذریعے کشمیری عوام کواپنے حق سے دستبردار کرا نے کی کو ششیں کی جا رہی ہے لیکن بھا رت شا ید جا نتا نہیں کہ جب تک ایک بھی پا کستانی اور مسلما ن زندہ ہے اس کا کشمیرپر قبضے کے خوا ب کو دوام دینا مندہ تعبیر نہیں ہو سکتا وہ وقت دور نہیں جب کشمیری آ زاد فضا میں جی رہے ہوں گے ۔جما عت اسلا می کو ئٹہ اور جے آئی یو تھ ونگ کی جا نب سے بھی یوم یکجہتی کشمیر کی مناسبت سے کوئٹہ میں ریلی اور مظاہرے کااہتمام کیا گیا جس کی قیادت جماعت اسلامی ضلع کوئٹہ کے امیر حافظ نور علی ودیگر کررہے تھے مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر کشمیری مسلمانوں سے اظہار یکجہتی اور بھارتی مظالم کے خلاف نعرے درج تھے اس موقع پر مقررین کاکہناتھاکہ وہ دن دور نہیں جب کشمیر کی آزادی کا سورج طلوع ہوگا ،انہوں نے کہاکہ بھارت کشمیر پر قبضے کو دوام دینے کیلئے خطے میں جنگی جنون کا خواہاں ہے لیکن اس کا یہ خواب کبھی بھی شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا،پاکستان اور بھارت کے درمیان بنیادی مسئلہ ہی کشمیر کا تنازعہ ہے نریندر مودی اور اس کی ٹیم چاہے جو بھی قانون سازی اور اقدامات کیوں نہ اٹھائے کشمیر پر قبضے کو دوام دینے کا ان کا خواب پورا نہیں ہونے دیاجائے گا۔جماعت اسلامی کے کارکن اور ملک کی عوام کشمیر کی خاطر ہرممکن قربانی دینے کو تیار ہے ۔انہوں نے کہاکہ یوم یکجہتی کشمیر منانے کا مقصد اس عہد کا تجدید کرناہے کہ پاکستانی قوم کشمیریوں کی اخلاقی ،سفارتی حمایت کا سلسلہ آخری دم تک جاری رکھے گی ۔انہوں نے کہاکہ بھارت بزور طاقت اور ظلم وبربریت کشمیریوں کی آواز اور حق خود ارادیت واستصواب رائے کو دباناچاہتاہے یہ حقائق اب تمام دنیا پر عیاں ہوچکے ہیں ۔اس موقع پر بھارتی مظالم کے خلاف اور کشمیری مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے نعرے بازی بھی کی گئی ۔اہلیان ہزارہ ٹائون کی جانب سے بھی یوم یکجہتی کشمیر کی مناسبت سے مظاہرہ کیا گیا جس کی قیادت شیعہ کانفرنس کے سینئرنائب صدر آغا مسرت حسین ودیگر کررہے تھے ۔مظاہرین کاکہناتھاکہ کشمیر کا مسئلہ حل ہوئے بغیر اس خطے میں امن کانفاذ ممکن نہیں ہوسکتا بھارت کا جنگی جنون پورے خطے کو بھسم کرسکتاہے ۔پاکستانی عوام کے دل کشمیری مسلمانوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں بلکہ ہم کبھی بھی کشمیریوں پر بھارتی مظالم کو برداشت نہیں کرینگے اس سلسلے میں کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کیاجائے گا۔مظاہرے کے شرکاء نے مودی سرکار کے خلاف نعرے بازی کی اور مطالبہ کیاکہ مسئلہ کشمیر کشمیری عوام کی خواہشات کے عین مطابق اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں حل کیاجائے ۔دریںاثناء آل بلوچستان کلرک اینڈ ٹیکنیکل ایمپلائز ایسوسی ایشن کی جانب سے فشریز آفس سریاب روڈ سے ضلع کوئٹہ کے صدر جلیل رند کی قیادت میں ریلی نکالی گئی جو مختلف شاہراہوں سے ہوتی ہوئی ہاکی چوک پر مظاہرے کی شکل اختیار کرگئی مظاہرین نے کتبے اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر نعرے درج تھے ۔مظاہرین کاکہناتھاکہ کشمیر پاکستان کی اٹوٹ انگ ہے جس سے دستبردار ہونے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا بلکہ اس سلسلے میں کسی قربانی سے دریغ نہیں کیاجائے گا کشمیر میں جاری بھارتی بربربیت پر اقوام متحدہ اور عالمی انسانی حقوق کی تنظیموں کی خاموشی قابل افسوس وحیرت ہے ،بھارتی سرکار اس وقت سنگین انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں میں ملوث ہیں جس کا واضح ثبوت مہینوں سے جاری کرفیو ہیں جس کے باعث کشمیریوں سے ان کی بنیادی انسانی حقوق بھی چھین لئے گئے ہیں لیکن یہ بھارت کی بھول ہے کہ وہ بزور طاقت کشمیر پر اپنے قبضے کو مزید دوام دے سکے گاکیونکہ پاکستان کا بچہ بچہ کشمیر کیلئے ہرممکن قربانی دینے کو تیارہے ۔اس موقع پر نعرے بازی بھی کی گئی ۔علاوہ ازیں صوبائی مشیر و چیئرپرسن کیو ڈی اے محترمہ بشریٰ رند نے یوم یکجہتی کشمیر کی مناسبت سے اپنے بیان میں کہا ہے کہ خطے میں امن کا خواب اسی وقت شرمندہ تعبیر ہوسکتا ہے جب کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل نکالا جائے کشمیر کا مسئلہ بھارت اور پاکستان کے درمیان بنیادی تنازعہ ہے اور مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر امن ممکن نہیں انہوں نے کہاہے کہ بھارت زبردستی کشمیری عوام کے حقوق کو پامال کرتے ہوئے بے گناہ کشمیری عوام پر ظلم و جبر جاری رکھے ہوئے ہے لیکن اب بھارت کا مکروہ چہرہ دنیا کے سامنے زیادہ دیر تک چھپا نہیں رہے گا اور نہ ہی بھارت کشمیروں کی آواز کو دبا سکتا ہے انہوں نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ بھارت کے مظالم کا نوٹس لیتے ہوئے اقوام متحدہ کی قرادادوں کے مطابق کشمیروں کو ان کا حق خوداردیت دلوایا جائے ،انہوں نے کہا کہ پاکستان کی اخلاقی اور سفارتی حمایت کشمیروں کو کل بھی حاصل تھی اور آئندہ بھی رہے گی پاکستانی قوم کے دل اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں دیگر صوبوں کی طرح بلوچستان کی عوام بھی اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ یکجہتی کے اظہار میں کسی سے پیچھے نہیں جلد کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہوگا انشاللہ۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے کورڈینیٹر اور بلوچستان عوامی پارٹی کے سینئرنائب صدر میر عبدالرئوف رند نے اپنے بیان میں کہا کہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے میر عبدالرئوف رند نے کہا کہ کشمیر کی آزادی کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے کشمیر کی آزادی کے لئے کئی جنگیں لڑی گئیں مہم چلائی گئیں پاکستان اور بھارت کے درمیان مسلہ کشمیر کو لے کر کئی معاہدے بھی طے پائے لیکن بھارت کی چالاکی اور بے ایمانی ہمیشہ کشمیری مسلمانوں کے حق کو دباتی رہی وادی کشمیر آج کل حق و باطل کا معرکہ کارساز بنی ہوئی ہے. اس ظلم سے نجات کے لئے جہاد سے سرشار پاکستانی افواج اور عوام محمود غزنوی بن کربھارتی سومناتی بت پاش پاش کرنے کیلئے تیار ہیں. آج کے مسلمان کل کے محمد بن قاسم کا روپ دھارینئے ہندو راجہ کا سر کچلنے کے لئے پرعزم ہیں. بزدل بھارت کو تاریخ انسانیت کا یہ سبق شاید یاد نہیں کہ جب خدا کی زمین ظلم سے بھر جاتی ہے توپھر قہر خداوندی جوش میں آتا ہے کفر و باطل کے نصیب میں شکست و ذلت اس کا نصیب بن جاتی ہے مودی اپنے سفاکانہ حرکت کی وجہ سے کشمیر کھونے کیلئے تیار رہے انشا اللہ اب وہ دن دور نہیں جب کشمیری مسلمان آزادی کے فضا میں سانس لیں گے.۔صوبائی دارالحکومت کوئٹہ کے علاوہ گزشتہ روز چاغی ،دالبندین ،اوتھل ،چمن ،ماشکیل ،قلعہ عبداللہ ،لورالائی ،پشین ،ہرنائی ،زیارت ،سبی ،نصیرآباد، جعفرآباد،خضدار،بھاگ ،جھل مگسی ،اوستہ محمد،دکی ،خاران ،ڈیرہ بگٹی ،کوہلو، بارکھان ،اوتھل ،حب ،قلعہ سیف اللہ سمیت دیگر میں بھی یوم یکجہتی کشمیر کی مناسبت سے ریلیوں ،مظاہروں اور تقاریب کاانعقاد کیاگیا۔بدھ کیر وز چاغی میں الفتح پینل،خان سنجرانی پینل ، بواہزہائی اسکول چاغی،ہائی اسکول کلی سخی پیر محمد چاغی، بواہزہائی اسکول دشت گوران ،جمعیت علما اسلام، ملک کریم داد پینل،پاکستان راہ حق پارٹی، پی ٹی آئی چاغی کے زیراہتمام اور ایف سی 56ونگ کے کرنل صیب یوسف بٹ کے قیادت میں کشمیریوں کے حق میں ریلی نکالی گئی اور مظاہرہ کیاگیا۔مقررین نے خطاب کرتے ہوے کہا کہ پاکستان کا بچہ بچہ کشمیر کی حق خوداریت کی حمایت کرتا ہے کشمیر پاکستان کے شہہ رگ ہیں کشمیریوں کے نسل کشی پر اقوام عالم کی خاموشی لحمہ فکریہ ہے بھارت کشمیر میں مسلمان کشمیریوں کے نسل کشی کررہا ہے کشمیر کا مسلئہ عالمی سطح پر پھر سے زندہ ہوا ہے انھوں نے کہا کہ کشمیر میں ایک مہینے سے کھانے پینے اور ادویات کی قلت پیدا ہو چکی ہے عالمی برادری اور امت مسلمہ کو خواب غفلت سے جاگناہوگا ورنہ بھارتی مظالم خطے کو ایک خوفناک ایٹمی جنگ کی جانب دھکیل رہے ہیں اس موقع ملک کریم داد محمد حسنی ، سردار عبدالغیاث درانی، میراللہ بخش محمد حسنی،میر نوروز خان سنجرانی ،ہیڈ ماسٹر ہائی اسکول چاغی سید مصطفی شاہ،ہیڈ ماسٹر ہائی سکول کلی سخی پیر محمد درانی ندیم بڑیچ، ہائی سکول دشت گوران صدر ایدین عینی ،میر نوروز خان سنجرانی، حاجی نورآحمد مینگل،،، میر شکیل احمد سنجرانی، سردار یعقوب پیرکزئی،سردار علی دوست مینگل،حاجی سلطان علی محمد حسنی، مولانا عبیداللہ بوبگزئی، حافظ حسین احمد ،حاجی محمد گل درانی ، سردار سخی داد شے زئی، میر سعید آحمد سنجرانی میر نوروز خان محمد حسنی، حاجی سلطان علی محمد حسنی سردارزادہ نیثار آحمد درانی میر ضیا الحق محمد حسنی اشرف نور حسنی، جمعدار مولا بخش حسنی موجود تھے ۔ملک بھر کی طرح ضلع چاغی کے مختلف علاقوں میں کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں ضلع کے مختلف اسکولوں کے طلبا نے بھی ریلیاں نکالی گئی کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کا اظہار کیاضلعی انتظامیہ کی جانب سے اے ڈی سی بادل دشتی کی قیادت میں کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلی نکالی گئی دریں اثنا الفتح پینل کی جانب سے بھی 5 فروری کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلی نکالی گئی ریلی دالبندین پریس کلب سے شروع ہوکر شہر کے مختلف شاہراوں پر گشت کیا مرکزی چوک پر جلسے کی شکل اختیار کی جلسے سے حاجی میرآحمد محمد حسنی، قبائلی رہنما حاجی ملک خدابخش سیاہ پاد رند،ودیگر نے خطاب کرتے ہوئے بتایا کشمیر ہمارا شہہ رگ ہے ہم کشمیری عوام کے ساتھ کھڑے ہیں کشمیری عوام کو کسی صورت میں تنہا نہیں چھوڑا جائے گا۔ بعدازہ مرکزی چوک پر مودی سرکار کا پتلا نظر آتش کر دیا ضلع بھر کے تمام شہروں چاگئے، نوکنڈی، دالبندین میں مختلف قبائلی عمائدین اور شہریوں کی جانب سے ریلیاں نکالی گئی ریلیوں کو کی جانب سے سخت سیکورٹی تعینات کردی گئی تھی ایف سی پبلک سکول دالبندین میں یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے ایک شاندار تقریب ھوئی جس میں ایف سی پبلک سکول کے طلبا نے کشمیر سے اظہار یکجہتی کے لیے ملی نغمے، ٹیبلوز اور تقاریر پیش کیں۔تقریب کے آخر میں مہمان خصوصی کمانڈنٹ دالبندین رائفلز کرنل سکندر حیات چوہدری نے تقررکی۔جس میں ایف سی پبلک سکول دالبندین کے طلبا کے جذبے کی تعریف کی۔اور کہا کشمیر پاکستان کی شھ رگ ھے۔ھم کشمیریوں کے ساتھ ھیں ۔بھارت کا اصل چھرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کریں گے ۔تقریب کے بعد دالبندین شہر میں ایک ریلی نکالی گئی جس میں ایف سی پبلک سکول دالبندین کے طلبا اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی۔جس میں طلبا نے کشمریوں سے اظہار یکجہتی کے حوالے سے بلند شگاف نعرے لگائے ۔ریلی ایف سی پبلک سکول سے شروع ہو کے بازار سے ھوتے ھوے شیخ چوک سے واپس ایف سی پبلک سکول میں اختتام پذیر ہوئی ۔یوم کشمیر کے موقع پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے گورنمنٹ ہائی سکول لدگشت ماشکیل میں تقریب اور ہائی سکول تا ماشکیل بازار ریلی کا انعقاد کیا گیا۔ جسمیں اسسٹنٹ کمیشنرماشکیل مدثرقیصرانی، ایف سی 73ونگ ماشکیل کے کیپٹن حمزہ الطاف، کیپٹن ارسلان ملک، ایس ایچ او ماشکیل، سیاسی قبائلی رہنماوں قبائل و عوام، اساتذہ کرام، طلبا نے شرکت کی، سکول تقریب میں کیپٹن حمزہ الطاف و سکول طلبا نے شرکا مجلس سے خطاب کیا اور کیپٹن حمزہ الطاف نے طلبا میں نقد انعامات تقسیم کئے۔ ماشکیل بازار میں یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے کثیر تعداد میں عوام نے شرکت کی اس موقع پہ سیاسی قبائلی رہنما میر احسان الہی، سیاسی سماجی رہنما میرجیند خان ریکی، پی ٹی آئی کے ضلعی رہنما میر کبیر احمد ریکی میر صدام حسین نصروئی، میر امام بخش ریکی، محمد نزر ملنگزئی نے اپنے خطاب میں کشمیریوں سے مکمل اظہاریکجہتی کرکے بھارتی مظالم کی بھرپور مذمت کی۔پورے ملک کی طر ح اوستہ محمد میں اسسٹنٹ کمشنر اوستہ محمد ار شد حسین جما لی کی قیادت میں مچھلی پل سے 5فرور ی یکجہتی کشمیر کے سلسلے میں نکا لی جا نے والی ریلی جو شہر کے مختلف راستوں سے ہو تا ہوا اسسٹنٹ کمشنر آ فس میں جلسہ کی شکل اختیار کی جس میں سیاسی سماجی اقلیتی برادری سماجی رہنمائوں طالب علم ، پرو فیسران نے بھی شر کت کی اس موقع پر پر چم کشا ئی بھی کی گئی اس موقع پر ریلی سے اسسٹنٹ کمشنر ارشد حسین جما لی ، چیف آ فیسر محمد انور قمبرا نی ، تحصیلدار محمد ابرا ہیم پلال ، ڈی ای او ایجو کیشن آ فیسر فیض اللہ کا کڑ ، سیکر یٹر ی مار کیٹ کمیٹی نصر اللہ زہر ی ، ڈی ڈی ای او اوستہ محمد شاہ بخش پند را نی ،میڈم نور جہان میمن ، آ ل پارٹیز کے چیئر مین احسان علی جمالی ، بخشل مستو ئی ، محمد صد یق عمرا نی ،پرو فیسر خالد حسین سیلاچی ، ڈا کٹر سکندر ، مکھی نا نک سنگھ ، پرو فیسر عبید اللہ زہری و دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر یوں کے ساتھ ہونے والے ظلم کا حساب بھارت کو دینا پڑے گا اور مقبو ضہ کشمیر میں بھار تی ریا ستی دہشت گردی کی جا رہی ہے اور پچھلے سات دہا ئیوں سے ظلم وستم کے پہاڑ تو ڑے جا رہے ہیں مقبو ضہ مو دی میں پیلٹ گن سے ہزاروں کشمیر یو ں کی آ نکھوں کو چھلی کیا گیا پچھلے چھ ماہ سے کر فیو نا فذ ہے جس سے کشمیر یوں کا معا شی قتل بھی ہو رہا ہے بطور انسان مسلمان اور پاکستا نی ہم سب پر فر ض عا ئد ہوتا ہے کہ ہم کشمیر یوں کی بھر پور حمایت کر یں یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے اوستہ محمد کی عوام نے ریلی میں بھر پور شر کت کر کے یہ ثا بت کر دیا کہ وہ کشمیر ی عوا م کے ساتھ شا نہ بشا نہ کھڑ ے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ وقت آ گیا ہے ظلم کے داستان ختم ہو نے والی ہے کیوں کہ پور ے مسلم مما لک نے یکجا ہو کر کشمیر کو پاکستان میں شامل کر نے کی بھر پور کو شش کر رہے ہیں بھارت کے حکمرا ن ہو ش کے نا خن لیں کشمیر کے عوا م تنہا نہیں کشمیر پر ہونے والے ظلم کا حساب انڈ یا کو دینا پڑ ے گا کشمیر یوں پر ظلم پاکستان کے عوام کبھی برداشت نہیں کرے گی اب وقت آ چکا ہے کشمیر بنے گا پاکستان او رمٹ کے رہے گا ہندو ستان ریلی کے شر کاء نے کشمیر یوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے پلے کارڈ اور انڈ یا مردہ آ باد پا کستان زندہ باد ، پاک فو ج زندہ باد کے نعر ے بینرز میں در ج تھے ، آ خر میں اسسٹنٹ کمشنر نے ارشد حسین جما لی نے تمام سیاسی و سماجی طالب علموں پر فیسران اور دیگر شہر یوں کا شکر یہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں تمام شہر یوں کا تہہ دل سے شکر گزار ہوں کہ انہوں نے کشمیر بھا ئیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیئے اس پرو گرام میں شامل ہو ئے ۔ یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر ملک بھر کی طرح لسبیلہ کے ضلعی ہیڈکوارٹر اوتھل میں کشمیروں سے اظہار یکجہتی کیلئے ڈپٹی کمشنر لسبیلہ حسن وقار چیمہ ،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر لسبیلہ نوید احمد ہاشمی کی قیادت میں ایک بہت بڑی ڈپٹی کمشنر آفس سے نکالی گئی،ریلی کے شرکاء نے مین قومی شاہراہ کا گشت کیا اس دوران شرکاء نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھارکھے تھے اور شرکاء کشمیریوں کی حمایت میں زبردست نعرے بازی کرتے رہے اور گشت کے دوران وقفے وقفے سے پاکستانی اور کشمیری ترانوں سے فضاگونجتی رہی ریلی مین شاہراہ کا گشت کرتے ہوئے دوبارہ جب ڈپٹی کمشنر آفس پہنچی تو وہاں پرجلسے کی شکل اختیار کرگئی جہاں پر ڈپٹی کمشنر لسبیلہ حسن وقار چیمہ،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر لسبیلہ نوید احمد ہاشمی ،سینئرسپرنٹنڈنٹ پولیس لسبیلہ پرویز خان عمرانی ،چیف ٹرائبل سردار غلام فاروق شیخ، سردار رسول بخش برہ، سردار عبدالرشید پھورائی، غلام محمد عرف گلو جاموٹ، جی ٹی اے لسبیلہ کے جنرل سیکریٹری عبدالواحد سومرو، سردار رحمت اللہ خاصخیلی، اوتھل پریس کلب کے صدر محمد عمر لاسی، سابق کونسلر پرکاش کمار لاسی، غلام قادر دودا،عبدالستار صائم، BAPیوتھ ونگ کے چیئرمین عبدالرشید جاموٹ، کامریڈ ولی محمد جاموٹ، طالبعلم اشرف علی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر پاکستان کا حصہ ہے اور رہے گا کشمیری مسلمانوں پر 1947ء سے ہی ظلم و بربریت کی جارہی ہے اور پاکستانی قوم 1947ء سے ہی کشمیری مسلمانوں کی جدوجہد آزادی کے حصول میں شانہ بشانہ رہی ہے اور آج بھی پاکستانی قوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام اپنے حق خوداردیت کے حصول اور بھارت کے غاصبانہ قبضے کے خلاف آزادی کی جنگ لڑرہے ہیں وہ دن دور نہیں جب انہیں اپنی جدوجہد میں کامیابی نصیب ہوگی انہوں نے کہا کہ پاکستان کا بچہ بوڑھا اور نوجوان اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے اور آج بھی کشمیر میں پاکستان کے جھنڈے لہرا رہے ہیں کشمیر پاکستان کا اٹوٹ انگ ہے اقوام متحدہ کشمیریوں کے موقف کو تسلیم کرتے ہوئے کشمیریوں کو حق خودارادیت دے مقررین نے کہاکہ ہم کشمیریوں کی لازوال قربانیوں پرانہیں خراج تحسین پیش کرتے ہیں انشاء اللہ کشمیر جلدآزاد ہوگااور کشمیری جنت نظیروادی کی آزاد فضاء میں سانس لیں گے یوم یکجہتی کشمیر ریلی میں سیاسی و سماجی شخصیات ، قبائلی زعما اور سرکاری افسران، اقلیتی برادری ، اساتذہ ، طلباء اور عوام نے بہت بڑی تعداد میں شرکت کی۔یوم یکجہتی کشمیر ڈے کے حوالے سے ملک بھر کی طرح نصیرآباد میں بھی مختلف سیاسی و سماجی اور مذہبی جماعتوں پاکستان تحریک انصاف ، پاکستان پیٹریاٹک یوتھ بلوچستان ،جماعت اسلامی ، اصلاح الفقراء الحسینی،سنی تحریک، جے یوپی نورانی،اورلبیک یارسول اللہ اورمنہاج القرآن کی جانب سے علحیدہ علحیدہ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں نکالی گئیں ریلیوں کے شرکاء کی جانب سے بھارتی مظالم اور کشمیریوں سے ہونے والی ظلم وبربریت کے خلاف شدید نعرے با زی کرتے رہے مظاہرین نے بھارتی وزیراعظم کے پتلے بھی نزر آتش کئے پی ٹی آئی کے صوبائی ایسٹ ویسٹ کے جنرل سیکرٹری میرشوکت بنگلزئی ،اورمرکزی رہنماء میر اورنگزیب خان جمالی،ضلعی صدر وڈیرہ عرض محمد عمرانی کی قیادت میں انصاف ہاوس سے ریلی نکالی گئی جس میں، میرامداد علی بنگلزئی،قربان علی منگی، محمد وارث بنگلزئی، غازی خان پیچوہا سمیت دیگر سینکڑوں افراد شریک تھے ریلی کے شرکاء ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھائے ہوئے مختلف مقامات سے ہوتی ہوئی پریس کلب کے سامنے پہنچی،پاکستان پیٹریاٹک یوتھ بلوچستان کے صدرمحمد وارث ابڑو کی قیادت میں جاموٹ ہائوس ڈیرہ مرادجمالی سے ریلی نکالی گئی جس میںسابق کونسلر منظوراحمد بھنگر، حافظ صاحب علی تنیو،سفرخان جویاسمیت بڑی تعدادمیں لوگوں نے شرکت کی ،جماعت اسلامی نصیرآباد کے امیرخاوندبخش مینگل کی قیادت میںالہدیٰ سکول سے ریلی نکالی گئی ریلی میں صوبائی نائب امیر بشیراحمد ماندائی،سابق ضلعی امیر پروفیسرمحمدا براہیم ابڑو، غلام حیدرمنجھو،لیاقت چکھڑا،اماللہ چکھڑا،سمیت دیگر سکول کے طلبہ نے شرکت کی ، اصلاح الفقراء الحسینی ،سنی تحریک، جے یوپی نورانی،اورلبیک یارسول اللہ اورمنہاج القرآن کی ایک مشترکہ ریلی مولوی روستم نورانی،نواب الدین ڈومکی، غلام مصطفیٰ نیچاری،کریم بخش ابڑو،خلیل احمدقریشی ،نثاراحمدعمرانی،سمیت دیگر نے قیادت کی مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کشمیری بھائیوں کو ہرگزتنہا نہیںچھوڑیں گے نہتے کشمیریوں پربھارتی مظالم کے خلاف ہرپلیٹ فارم پر آوازبلند کرتے رہیں گے عالمی برداری کے ضمیر کو جھنجھوڑنے کیلئے ہم کوئی کسر نہیں چھوڑسکتے کشمیری بھائیوں کی سیاسی سفارتی مدد ہرسوجاری رہے گی کشمیری مسلمانوں سے ہماراخون کا رشتہ ہے بھارت کا ظلم مزید نہیں چل سکتابھارت مسلمانوں کے لئے خطرناک ترین ملک بن چکا ہے اقلیتی برداری پرظلم اوربربریت کے پہاڑتوڑے جارہے ہیں آر ایس ایس کے غنڈے مسلمانوں کاقتل عام کرنے میں پیش پیش ہیں اقوام متحدہ کو بھارت کے خلاف کاروائی کرنے کی اشدضرورت ہے ہم مودی کے نازی ازم کی بھرپوراندازمیں مذمت کرتے ہیںبھارتی فوجی بی جے پی کے کارندے بن چکے ہیںعالمی برادری بھارتی فوج کے ایسے ذہنی بیماروں اور انسانیت کے مجرموں کے خلاف سخت ردعمل کا اظہار کرے انہوںنے کہا کہ کشمیریوںکواپنے گھروں میں قید بند ہوئے چا ماہ ہونے والے ہیں مگر عالمی برداری کے ماتھے پر ٹس سے مس نہیں آئی اقوام متحدہ کی خاموشی یہ ظاہرکرتی ہے کہ وہ ظالم کے ساتھ کھڑے ہیں ایسا عمل مسلمانوں کے دلوں میں مزید رنج وغم پیداکرنے کے مترادف ہے انہوںنے کہاکہ ہم سلام پیش کرتے ہیں اپنی کشمیری ماؤں اوربہنوں کوجنہوں نے جرات اوربہادری سے بھارتی جبر و ظلم کا مقابلہ کیاہواہے جدوجہدآزادی میں کشمیریوں کی قربانیاں اور خدمات تاریخ کا ناقابل فراموش باب ہیں۔صحبت پورمیں بھی یوم یکجہتی کشمیرکے حوالے سے ضلعی انتظامیہ ،سیاسی ومذہبی تنظیموں اورسول سوسائیٹی کی جانب سے کشمیریوں سے ہمدردی کیلئے ریلیاں نکالی گئیں۔مرکزی ریلی کھوسہ ہائوس صحبت پور سے BAPکے ضلعی آرگنائزرمیرفتح علی کھوسہ و میرسرفرازاحمدکھوسہ کی قیادت میں نکالی گئی۔جبکہ جمعیت علماء اسلام اور جماعت اسلامی کی جانب بھی بھی ریلیاں نکالی گئی۔ گورنمنٹ ہائی سکول صحبت پور کے سینئرہیڈماسٹررحمت اللہ بھنگرکی جانب سے اسکول میں اس حوالے سے ایک پروقارتقریب منعقدکی گئی۔جس میں اسکول کے بچوں نے کشمیرکے حوالے سے تقاریرکیئے اور بھارتی مظالم کے خاکے بھی پیش کیئے۔گورنمنٹ بوائزہائی سکول صحبت پور سے ڈپٹی کمشنرصحبت پور محمدیونس سنجرانی کی قیادت میں ریلی نکالی گئی۔ریلی میںSSPصحبت پورسردارحسن خان موسیٰ خیل، سول سوسائیٹی کے لوگوں ،بچوں ،اساتذہ اور ضلعی افسران نے بڑی تعدادمیں شرکت کی۔ریلی شہرکے مختلف راستوں سے ہوتی ہوئی ڈسٹرکٹ پریس کلب صحبت پور پہنچی۔جہاں پر ریلی کے شرکاء سے DCصحبت پورمحمدیونس سنجرانی،DEOضیاء الرحمن مینگل،میرفتح علی خان کھوسہ، میرسرفرازاحمدخان کھوسہ،جمعیت علماء اسلام کے امیرسمندرخان کھوسہ، حافظ محمدصدیق بھنگر،ٹکری عبدالرحمن پرکانی، جماعت اسلامی کے قائمقام امیراللہ ڈنہ منگریوو دیگرنے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیرمیں بھارتی ظلم وبربریت کی انتہاہوگئی ہے۔بھارت نے تقریباََ200دنوں سے 80لاکھ مسلمانوں کو قیدی بناکررکھاہواہے۔اقوام متحدہ کو چاہیئے کہ وہ فوری طورپر کشمیرسے بھارتی قبضہ ختم کراکرکشمیریوں کو اپناحق خودارادیت دے۔اوربے گناہ مسلمانوں پرمظالم بندکرے۔کشمیریوں کی مشکلات کو دن بدن بڑھایاجارہاہے۔جس سے ہماری بہت دل آزاری ہوتی ہے۔ہم کشمیریوں کو کسی بھی حال میں تنہانہیں چھوڑینگے۔کشمیرپاکستان کی شہ رگ ہے۔دنیابھرمیں بھارتی مکروہ چہرہ بے نقاب ہوگیاہے۔اب وہ دن دورنہیں انشاء اللہ بہت جلدکشمیرآزادہوگااور کشمیربنے گاپاکستان۔کشمیرکی آزادی کیلئے پاکستانی قوم کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں