کرونا وائرس :ہنگامی اجلاس کا انعقاد

کرونا وائرس کے حوالے سے ڈائریکٹر جنرل صحت عامہ آزاد کشمیر کی سربراہی میں ہنگامی اجلاس کا انعقاد
مظفرآباد: کرونا وائرس کے حوالے سے ڈائریکٹر جنرل صحت عامہ آزاد کشمیر کی سربراہی میں ہنگامی اجلاس ہوا جس میں کرونا وائرس کے لیے ریاست بھر میں کیے اقدامات اور آگاہی مہم کا جائزہ لیا گیا۔قومی ایڈوائزری گائیڈ لائن اور نیشنل ایکشن پلان کے تحت ٹیمیں تشکیل دے دی گئیںہیں ۔ جن کی سربراہی ڈی ایچ اووز کررہے ہیں۔آزادکشمیر کے ہسپتالوں میں کرونا وائرس کے نمونے ٹیسٹ کے لیے پاکستان کے ہسپتالوں میں بھیجنے کی سہولت دستیاب ہے ،ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسران اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹس صاحبان کو ایمرجنسی لے لیے وارڈز؛ بیڈز کو ریزرو کیے جانے اور اور کرونا کے متعلق ایڈوائزری؛ گائیڈ لائن؛احتیاطی تدابیر؛ آویزاں کیے ہوئے بینرز؛ روک تھام م کے حوالے سے کیے ہوئے اقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا،پانچ ہسپتالوں سی ایم ایچ ہسپتال مظفرآباد؛عباس انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس امبور ہسپتال؛ڈی ایچ کیو ہسپتال کوٹلی؛ ڈی ایچ کیو ہسپتال میرپور بھی ایمرجنسی کے لیے مختص کر دیے گئے۔ریاست بھر کے3ہزار سے زائد لیڈ ی ہیلتھ ورکرز سمیت محکمہ صحت کے سٹاف شامل ہیں کو کرونا وائرس کی آگاہی کی ٹریننگ دی گئی جنہوں نے علاقائی طور پر بھی محلوں میں سکولوں میں کرونا وائرس کے حوالے 2536 سیشن بھی دیے اور 984 سٹاف بھی ایمرجنسی کے لیے مختص کردیا۔دوران میٹنگ سیکرٹری صحت عامہ میجر جنرل طاہر سردار سردار کی ہدایت کے مطابق کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے چیسٹ ہسپتال سی ڈی جی ایچ ہل باغ کو بھی مختص کرتے ہوئے روٹین کے مریضوں کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال دھیرکوٹ کو ہدایات جاری کی۔دوران میٹنگ ڈبلیو ایچ او کے نمائندگان ڈاکٹر عبدالواحد برت نے کرونا وائرس کے اقدامات میں مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔کرونا وائرس کے حوالے سے ہنگامی جائزہ اجلاس ڈائریکٹر سی ڈی سی و کوآرڈینیٹر نیشنل پروگرام ڈاکٹر محمود حسین کیانی؛ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر مظفرآباد ڈاکٹر محمد سعید اعوان؛ریجنل ڈائریکٹر ایم این سی ایچ میڈم ڈاکٹر فرحت شاہین؛ ایڈیشنل ڈائریکٹر ڈاکٹر سردار سجاد حسین؛پروونشیل پروگرام منیجر ای پی آئی نیسپ ڈپٹی ڈائریکٹر اورنگزیب مغل؛ڈاکٹر مرتضیٰ گیلانی ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر آفس نمائندگان؛فوکل پرسن کرونا وائرس ڈاکٹر ندیم الرحمان شاہ اور دیگر نے شرکت کی اور ڈائریکٹر جنرل صحت عامہ آزاد کشمیر ڈاکٹر سردار آفتاب حسین نے ہدایات جاری کی کیں کہ کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے تمام توانائیاں بروئے کار لائی جارہی ہیں۔اس بیماری کو احتیاطی تدابیر اختیار کرکے اس سے بچا جا سکتا ہے ،مسلمان کیلئے صفائی نصف ایمان ہے ،کرونا وائر سے اموات کی شرح صرف دو فیصد ہے ،اس میں ساٹھ سال سے زائد عمر کے لوگ جو شوگر ،بلڈ پریشر،ہیپاٹائٹس یا کسی دوسری بیماری کا شکار ہیں،انہوں نے کہا کہ تمام ڈی ایچ اوز،ایم ایس روزانہ کی بنیاد پر وائٹس اپ ،میسج کے ذریعے کرونا کیس کے حوالے سے ڈی جی آفس میں رابطہ میں ہیں اور رپورٹنگ کررہے ہیں،کروناوائرس کیلئے حفاظتی اقدامات کیے گئے ہیں ،کرونا وائرس 39سے زائد ممالک میں پھیل چکا ہے ،جس میں پاکستان میں شامل ہے ،پاکستان میںکرونا وائرس کے دو کیس رپورٹ ہوئے ،جبکہ آزادکشمیر میں کرونا وائرس کا کوئی کیس نہیں ہے ،چائینہ ،ایران سمیت متاثرہ ممالک سے آزادکشمیر میں آنے والے طلبہ وطالبات سمیت آزادکشمیر کے شہریوں کو کا اسلام آباد میں ہی ٹیسٹ کر کہ بھیجا جاتا ہے ،آزادکشمیر میں ڈائریکٹریٹ کی سطح پر ڈاکٹر ندیم الرحمان کو فوکل پرسن مقرر کیا گیا جبکہ آزادکشمیر بھر کے ڈاکٹر محمو دحسین کیانی ڈائریکٹر سی ڈی سی کو فوکل پرسن مقرر کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مرغ انڈے گوشت کو اچھے طریقے سے پکا کر استعمال کیا جائے ،نزلہ زکام کے مریض بار بار ناک کو نہ چھوئیں ،صابن سے 20سکینڈ تک ہاتھ دھویں ،نزلہ زکام بخار گلے کے درد کی صورت میں گھر میں ہی آرم کریں ،شدید بخارکھانسی والے افراد میل جول کم رکھیں ،کھانسے ،چھینکنے کے دوران ٹشوز یا رومال کا استعمال کیا جائے اُس کے بعد استعمال اشیاء کو جلا دیا جائے ،لوگوں میں کرونا وائرس کے حوالے سے شعور بیدار کرنے کیلئے ہیلتھ سیشن کا سلسلہ جاری ہے صحت وصفائی کے ذریعے اس سے مہلک مرض سے بچا جاسکتا ہے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں