آزاد کشمیر حکومت کو لینڈ مافیا کیخلاف گرینڈ آپریشن کی ہدایات

وفاقی حکومت کا آزاد کشمیر حکومت کو لینڈ مافیا کیخلاف گرینڈ آپریشن کی ہدایات جاری کرنے کا فیصلہ
محکمہ اوقاف’ جنگلات اور دیگر سرکاری محکموں کی ہزاروں کنال اراضی قبضہ گروپوں کے پاس ہے
بعض علاقوں میں بااثر سیاسی شخصیات بھی سرکاری اراضی پر قابض ہیں
لینڈ مافیا کے خلاف آپریشن کی منظوری وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر سے لی جائے گی
اسلام آباد : وفاقی حکومت کا آزاد کشمیر حکومت کو سرکاری اراضی پر قابض لینڈ مافیا کے خلاف گرینڈ آپریشن کرنے کیلئے ہدایات جاری کرنے کا فیصلہ ‘ محکمہ اوقاف’ جنگلات اور دیگر سرکاری محکموں کی ہزاروں کنال اراضی قبضہ گروپوں کے پاس ہے’ بعض علاقوں میں بااثر سیاسی شخصیات بھی سرکاری اراضی پر قابض ہیں ‘ لینڈ مافیا کے خلاف آپریشن کی منظوری وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر سے لی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق آزاد کشمیر کی سرکاری اراضی کو مختلف قبضہ گروپوں اور لینڈ مافیا سے واگزار کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس کیلئے وفاقی حکومت نے حکومت آزاد کشمیر کو خط لکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزارت امور کشمیر میں قبضہ گروپوں کے زیر استعمال اراضی کو خاصی کرانے کے معاملے پر کافی حد تک مشاورت کرلی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق آزاد کشمیر میں محکمہ اوقاف اور محکمہ جنگلات کی اراضی کو قبضہ گروپوں سے واگزار کرانے کیلئے بڑے پیمانے پر آپریشن شروع کروائے جائیں گے ‘ آپریشن شروع کرنے سے قبل تمام متعلقہ محکموں سے قبضہ گروپوں کے زیر استعمال اراضی کی فہرستیں مرتب کروائی جائیں گی اور یہ فہرستیں چیف سیکرٹری آفس کو ارسال کی جائیں گی جس کے بعد وزیراعظم آزاد کشمیرکی منظوری سے ہر ضلع میں ڈپٹی کمشنر کو ذمہ داری سونپی جائے گی کہ وہ پولیس کی معاونت سے سرکاری اراضی متعلقہ محکموں کوواگزار کروا کر دیں اور اس کے لئے باضابطہ ٹائم فریم طے کیا جائے گا۔ جبکہ وفاق بھی حکومت آزاد کشمیر کو ہر طرح کا تعاون فراہم کرے گا تاکہ سرکاری اراضی متعلقہ محکموں کو واپس دلوائی جاسکے۔ واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے برسراقتدار آتے ہی وفاقی دارالحکومت اسلام آباد ‘ پنجاب’ سندھ’ خیبرپختونخوا میں بھی بڑے پیمانے پر سرکاری اراضی قبضہ گروپوں سے واگزار کروائی ہے۔




اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں